89

حکومت نے جنوری کے باقی دنوں میں پیٹرول کی قیمت میں 3 روپے تک اضافہ کر دیا

حکومت نے ہفتے کے روز بین الاقوامی مارکیٹ میں پیٹرولیم کی قیمتوں میں اضافے کے باعث پیٹرول کی قیمت میں 3.01 روپے اضافے کا اعلان کیا تھا۔

فنانس ڈویژن کے نوٹیفکیشن کے مطابق پیٹرول کے علاوہ دیگر پیٹرولیم مصنوعات میں بھی اضافہ 16 جنوری سے نافذ کیا جائے گا۔

پیٹرول، 3.01 روپے اضافے کے ساتھ اب 147.83 روپے فی لیٹر مہنگا ہو جائے گا، جب کہ ہائی سپیڈ ڈیزل (ایچ ایس ڈی) 3 روپے اضافے کے ساتھ اب 144.62 روپے فی لیٹر ہو جائے گا۔

اس کے علاوہ مٹی کا تیل 3 روپے مزید مہنگا ہو گا اور اس کی قیمت 116.48 روپے فی لیٹر ہو جائے گی جبکہ لائٹ ڈیزل آئل 3.33 روپے مہنگا ہو کر 114.54 روپے فی لیٹر ہو جائے گا۔

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے پیٹرول کی قیمت میں 5 روپے 52 پیسے اور ایچ ایس ڈی کی قیمت میں 6 روپے 19 پیسے فی لیٹر اضافے کی سفارش کی تھی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ “پیٹرولیم مصنوعات مسلسل چوتھے ہفتہ وار اضافہ دکھا رہی ہیں اور بین الاقوامی مارکیٹ میں صرف گزشتہ ہفتے میں 6.2 فیصد اضافہ دیکھا گیا،” بیان میں کہا گیا ہے۔

اس میں مزید کہا گیا ہے کہ بین الاقوامی منڈی میں قیمتیں گزشتہ سال سے بلند ترین سطح پر ہیں۔

فنانس ڈویژن نے کہا کہ موجودہ سیلز ٹیکس کی شرح اور مختلف پیٹرولیم مصنوعات پر پیٹرولیم لیوی بجٹ کے اہداف سے بہت کم ہے۔

بیان میں کہا گیا کہ “اوگرا کی سفارش کے خلاف […] وزیر اعظم نے گزشتہ پندرہ دن سے سیلز ٹیکس میں مزید کمی کے ذریعے بین الاقوامی قیمتوں کو جذب کرنے کی ہدایت کی ہے۔”

اس میں مزید کہا گیا کہ “وزارت خزانہ کو سیلز ٹیکس میں کمی کی وجہ سے 2.6 بلین روپے کا ریونیو نقصان پہنچے گا۔ اس لیے حکومت نے آخری صارفین کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں جزوی اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔”

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں