53

سعودی عرب نے ‘ریڈ لسٹ’ والے ممالک جانے والے شہریوں کے لئے 3 سالہ سفری پابندی کی دھمکی دی ہے: کورونا وائرس

سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے نے منگل کو کہا کہ سعودی عرب کورونا وائرس اور اس کی نئی شکلوں کو روکنے کی کوششوں کے تحت مملکت کی ‘ریڈ لسٹ’ میں ممالک جانے والے شہریوں پر تین سالہ سفری پابندی عائد کرے گا۔

اس میں وزارت داخلہ کے ایک عہدیدار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ کچھ سعودی شہریوں کو ، جنھیں مئی میں مارچ 2020 کے بعد پہلی بار حکام کی پیشگی اجازت کے بغیر بیرون ملک جانے کی اجازت دی گئی تھی ، نے سفری قواعد کی خلاف ورزی کی تھی۔

عہدیدار نے کہا ، “جو بھی شخص اس میں ملوث ثابت ہوا ہے اس کی واپسی پر قانونی احتساب اور بھاری جرمانے عائد کیے جائیں گے ، اور اس پر تین سال کے سفر پر پابندی ہوگی۔”

سعودی عرب نے افغانستان ، ارجنٹائن ، برازیل ، مصر ، ایتھوپیا ، ہندوستان ، انڈونیشیا ، لبنان ، پاکستان ، جنوبی افریقہ ، ترکی ، ویتنام اور متحدہ عرب امارات سمیت متعدد ممالک کے سفر یا آمدورفت پر پابندی عائد کردی ہے۔

عہدیدار نے بتایا ، “وزارت داخلہ اس بات پر زور دیتی ہے کہ شہریوں پر اب بھی براہ راست یا کسی دوسرے ملک کے راستے سے ان ریاستوں یا کسی بھی ایسے دوسرے ملک میں جانے کی پابندی عائد ہے جس پر وبائی بیماری کا کنٹرول ابھی باقی ہے یا جہاں نئے تناؤ پھیل چکے ہیں۔”

منگل کو خلیجی ریاست کی سب سے بڑی ریاست ، جس میں تقریبا 30 30 ملین آبادی ہے ، میں 1،379 نئے کوویڈ 19 میں انفیکشن ریکارڈ کیا گیا ، جس میں اس کے کل 520،774 واقعات اور 8،189 اموات ہوئیں۔

اس نے دیکھا کہ جون 2020 میں روزانہ انفیکشن 4000 سے اوپر کی چوٹی سے گر کر جنوری کے شروع میں 100 درجے سے نیچے آ گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں