81

پاکستان کا کوویڈ 19 کا بحران صرف بدتر ہوتا جا رہا ہے۔

کورونا وائرس کے خلاف پاکستان کی لڑائی ہر روز بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے ، ملک ہفتہ کی صبح 5 ہزار روزانہ کیسز کے قریب ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی تازہ ترین تعداد کے مطابق ، پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران 4،950 تازہ انفیکشنز کا پتہ چلا ، 58،479 کوویڈ 19 ٹیسٹ کیے جانے کے بعد۔

مثبت شرح 8.64 فیصد تک پہنچ گئی

این سی او سی کے اعدادوشمار سے پتہ چلتا ہے کہ ملک میں کوروناوائرس سے مرنے والوں کی تعداد اب 23،360 ہے جب کہ 65 افراد اس بیماری سے جاں بحق ہوچکے ہیں ، جبکہ صحت یاب مریضوں کی تعداد 940،164 ہے اور ملک میں فعال کیسز 66،287 ہیں۔

صوبہ وار خرابی کے مطابق ، سندھ میں کیسوں کی کل تعداد 380،093 ، خیبر پختونخوا میں 143،673 ، پنجاب میں 356،211 ، اسلام آباد میں 87،304 ، بلوچستان میں 30،289 ، آزاد جموں و کشمیر میں 24،145 اور گلگت بلتستان میں 8،096 تک پہنچ گئی ہے۔

سندھ حکومت نے نو روزہ لاک ڈاؤن کا اعلان کیا ہے جو آج سے نافذ ہے۔

لاک ڈاؤن کے تحت پابندیوں کے مطابق ، سرکاری دفاتر اگلے ہفتے سے بند ہوں گے ، جو لوگ ویکسین نہیں لگاتے انہیں 31 اگست کے بعد تنخواہ نہیں ملے گی ، سڑکوں پر گھومنے والے کسی کے ویکسینیشن کارڈ چیک کیے جائیں گے ، برآمدی صنعت کھلی رہے گی ، صوبے کی تمام مارکیٹیں بند رہیں گی ، تاہم دواخانے کھلے رہیں گے اور شہر کے اندر ٹرانسپورٹ بند رہے گی۔

کیٹاگری میں : Health

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں