26

مسلم لیگ ن کی زیرقیادت مخلوط حکومت نے قومی اسمبلی کی 9 نشستوں پر سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف درخواست دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے

مسلم لیگ (ن) کی زیرقیادت مخلوط حکومت نے قومی اسمبلی کے 9 حلقوں میں سابق وزیراعظم عمران خان کی نامزدگی کے خلاف درخواست دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو کہ اسپیکر کی جانب سے 5 اگست کو پی ٹی آئی کے نو ارکان اسمبلی کے استعفے منظور کیے جانے کے بعد خالی ہوئی تھیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے پارلیمنٹ کے ایوان زیریں کی 9 نشستوں پر ضمنی انتخابات کا شیڈول جاری کردیا۔ ضمنی انتخابات 25 ستمبر کو ہوں گے۔

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے تمام نشستوں پر خود الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا تھا، اور اپنے کاغذات نامزدگی بھی جمع کرا دیے۔

تاہم حکمران اتحادی جماعتوں نے ان کی نامزدگی پر اعتراض دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے اس حوالے سے قانونی ماہرین سے مشاورت بھی مکمل کر لی ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ اعتراضات ای سی پی میں 17 سے 20 اگست کے درمیان داخل کیے جائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ خان کے خلاف توشہ خانہ اور پی ٹی آئی کی غیر ملکی فنڈنگ کیسز میں ملوث ہونے پر اعتراضات ای سی پی کے پاس اٹھائے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں