51

بلوچستان میں دہشت گردوں کے حملے میں ایک ایف سی اہلکار شہید ، دو زخمی

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) نے بتایا کہ بلوچستان کے لورالائی میں دہشت گردوں کی گاڑی پر حملہ کرنے سے فرنٹیئر کور (ایف سی) کا ایک اہلکار شہید اور دو دیگر زخمی ہوگئے۔

فوج کے میڈیا ونگ کے مطابق ایف سی کی ایک گاڑی فوجیوں کو لے کر لورالائی کے شاہریگ علاقے سے گزر رہی تھی کہ دہشت گردوں نے اس پر فائرنگ کردی۔

آئی ایس پی آر نے کہا کہ ایف سی کے دستوں نے فوری جواب دیا اور 3 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔

فائرنگ کے تبادلے کے دوران نائیک شریف شہید ہوئے جبکہ حملے میں میجر قاسم اور ایک سپاہی زخمی ہوئے۔ لاش اور زخمیوں کو سی ایم ایچ کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔

دریں اثنا وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے ایف سی کی گاڑی پر دہشت گرد حملے کی مذمت کی ہے اور اسے بزدلانہ کارروائی قرار دیا ہے۔ انہوں نے نائیک شریف کے خاندان سے اظہار تعزیت بھی کیا۔


انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گرد اس طرح کے بزدلانہ حملے کر کے ہماری افواج کو کمزور نہیں کر سکتے۔

اس سے قبل 25 جون کو بلوچستان کے سبی میں دہشت گردوں کے حملے میں فرنٹیئر کور کے پانچ جوان شہید ہو گئے تھے۔

دہشت گردوں نے ضلع سبی کے علاقے سانگن میں ایف سی کی ایک گشتی پارٹی کو نشانہ بنایا تھا۔

آئی ایس پی آر کے بیان میں کہا گیا ہے کہ فائرنگ کے تبادلے کے دوران دہشت گردوں کو بھاری نقصان پہنچایا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں