18

20 ملین پاکستانی بچے ابھی تک سکول سے باہر ہیں: رپورٹ

سندھ ایجوکیشن اینڈ لٹریسی ڈیپارٹمنٹ اور جاپان انٹرنیشنل کارپوریشن ایجنسی کی طرف سے مشترکہ طور پر جاری کی گئی ایک رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ پاکستان میں کم از کم 20 ملین بچے ابھی تک سکول سے باہر ہیں۔

یہ رپورٹ عالمی یوم خواندگی کے موقع پر جاری کی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں سب سے زیادہ بچوں کی تعداد (او او ایس سی) جو کہ 60 لاکھ ہے ، کا تعلق سندھ سے ہے ، جبکہ او او ایس سی کی کم تعداد والے دیگر صوبوں میں حالات بہتر ہونے کے بجائے مزید خراب ہوئے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سندھ میں مجموعی طور پر 43 فیصد بچے جن کی عمریں 10 سال کے لگ بھگ ہیں اور 15 فیصد کے قریب 45 فیصد بچے سکول سے باہر ہیں۔

یہ شہری سندھ میں 28 فیصد اور دیہی سندھ میں 61 فیصد طلباء کی نمائندگی کرتا ہے۔

یونیسیف نے 22.8 ملین او او ایس سی کی رپورٹ دی
اقوام متحدہ کے بین الاقوامی بچوں کے ایمرجنسی فنڈ کی جانب سے گزشتہ سال جاری کی گئی ایک رپورٹ میں بتایا گیا کہ پاکستان دنیا کا دوسرا نمبر ہے جہاں او او ایس سی کی تعداد 22.8 ملین کے قریب ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں