20

وزیر اعظم عمران خان مہنگائی میں اضافے کے بعد ’میگا ریلیف پیکج‘ کا اعلان کریں گے

وزیر اعظم عمران خان بڑھتی ہوئی مہنگائی کے بوجھ تلے دبے ہوئے تقریباً ایک کروڑ لوگوں کی مدد کے لیے جلد ہی عوام کے لیے ’’میگا ریلیف پیکیج‘‘ کا اعلان کریں گے۔

آج پی ٹی آئی کی کور کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں وزیر اطلاعات نے کہا کہ مہنگائی پر قابو پانے کے لیے میگا پیکج اور پنجاب اور خیبرپختونخوا میں آئندہ بلدیاتی انتخابات سمیت دو بڑے ایجنڈے زیر بحث آئے۔

اس کے علاوہ فواد چوہدری نے کہا کہ کور کمیٹی نے بین الاقوامی مارکیٹ میں ایندھن کی قیمتوں میں مسلسل اضافے پر تشویش کا اظہار کیا۔

“اگرچہ، حکومت نے اس کے اثرات کو عوام تک پہنچنے سے روکنے کے لیے بہت سے اقدامات کیے ہیں، لیکن “متعلقہ بات یہ ہے کہ کب تک اس پر قابو پایا جائے گا۔”

انہوں نے مزید کہا کہ اجلاس میں ملک کے توانائی کے مسائل سے نمٹنے کے لیے ایک ایکشن پلان پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ ابہام ہے کہ پنجاب کے شہروں اور اضلاع کے میئرز کے انتخابات براہ راست ہوں گے یا بالواسطہ۔

وزیر نے دونوں صوبوں میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے بارے میں تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ “یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ انتخابات براہ راست طریقے سے ہوں گے اور شہر براہ راست انتخابات کے ذریعے اپنے میئرز کا انتخاب کریں گے۔”

“یہ وزیراعظم کا پاکستان تحریک انصاف سے روز اول سے وعدہ تھا کہ وہ براہ راست جمہوریت کو یقینی بنائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اب اس کی تیاریاں آخری مراحل میں ہیں۔

فواد نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات کے لیے امیدواروں کی نامزدگی کا عمل جلد شروع ہو جائے گا کیونکہ اس حوالے سے تمام تر تیاریوں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے جبکہ پارٹی کارکنوں خصوصاً پنجاب میں سیاسی کارکنوں کو متحرک کرنے کے لیے کہا گیا ہے۔

اسی طرح خیبرپختونخوا میں بھی بلدیاتی انتخابات کی مہم چلائی جا رہی ہے۔

کور کمیٹی نے الیکشن کمیشن آف پاکستان سے متعلق امور پر بھی تبادلہ خیال کیا، جس میں انہیں اور وزیر ریلوے اعظم سواتی کو بھیجے گئے نوٹسز بھی شامل ہیں، اور انہیں واپس لینے کا مطالبہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں