16

کراچی کوآپریٹو مارکیٹ میں آتشزدگی، 35 دکانیں جل کر خاکستر

کراچی کے علاقے صدر میں ریگل چوک کے قریب کوآپریٹو مارکیٹ میں اتوار کی شام آگ لگنے سے کم از کم 35 دکانیں ملبے کا ڈھیر بن گئیں۔

آگ بجھانے کا آپریشن فی الحال ایک فائر ٹینڈر اور ایک ٹیم موقع پر موجود ہے۔ شہر بھر کے تمام فائر اسٹیشنوں سے مزید مدد طلب کی گئی ہے۔

کمشنر کراچی محمد اقبال میمن اور مختلف قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار فائر فائٹنگ آپریشن کی نگرانی کے لیے جائے وقوعہ پر پہنچے۔

کراچی کمشنر نے جیو نیوز کو بتایا کہ آگ کو “تھرڈ ڈگری فائر” قرار دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مارکیٹ میں تقریباً 300-400 دکانیں ہیں جن میں سے 35 مکمل طور پر خاکستر ہو چکی ہیں۔

جب ان سے آگ لگنے کی وجہ پوچھی گئی تو انہوں نے کہا کہ اس معاملے پر فی الحال کوئی تبصرہ کرنا قبل از وقت ہوگا۔

تاہم، انہوں نے میڈیا کو وجہ کی نشاندہی کے لیے تحقیقات کا یقین دلایا۔

متاثرہ دکانداروں نے دعویٰ کیا کہ فائر ٹینڈر آگ لگنے کے ایک گھنٹے بعد پہنچ گئے اور کہا کہ بڑے نقصان سے بچا جا سکتا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ آگ گراؤنڈ فلور پر لگی اور کچھ ہی دیر میں پہلی منزل تک پھیل گئی کیونکہ وہاں دکانوں کے اندر کپڑے کا بہت بڑا ذخیرہ تھا۔

اس سے قبل فائر ڈپارٹمنٹ کے حکام نے بتایا کہ شہر کے مختلف فائر اسٹیشنوں سے فائر فائٹنگ ٹیموں کے ساتھ چار فائر ٹینڈرز کو فوری طور پر موقع پر بھیجا گیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ آگ ایک دکان میں لگی اور جلد ہی مارکیٹ میں موجود کئی دوسری دکانوں کو بھی لپیٹ میں لے لیا۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق لوگوں کو فوری طور پر علاقے سے نکال لیا گیا اور کوآپریٹو مارکیٹ کی طرف جانے اور جانے والی سڑکوں کو بند کر دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں