وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے الزام لگایا ہے کہ گلگت بلتستان کے سابق چیف جج رانا شمیم ​​مسلم لیگ ن کے آفیشل ممبر تھے جنہیں چیف جج کے عہدے پر تعینات کیا گیا اور پھر “پارٹی کی پسند کے حلف نامے” حاصل کیے گئے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عدلیہ اس معاملے کو اٹھائے اور اس کی مکمل تحقیقات کرے۔

چوہدری نے کہا کہ نواز نے جائیدادیں بنائیں جو بین الاقوامی اسکیموں میں سامنے آئیں لیکن جب بھی منی ٹریل کا مطالبہ کیا گیا تو وہ اس سے باہر نکل گئے۔

انہوں نے الزام لگایا کہ جب بھی نواز اور مریم کے خلاف مقدمات حتمی تبدیلی تک پہنچتے ہیں تو انہیں سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔

وزیراطلاعات نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی “فریب آڈیو اور ویڈیوز بنانے کی عادت” بن چکی ہے۔

چوہدری نے کہا، “اگر مریم نواز کو یقین ہے کہ جعلی آڈیوز ان کے کیس کو مضبوط کریں گی، تو انہیں عدالت جانا چاہیے۔”

انہوں نے بتایا کہ اس ہفتے اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کمی دیکھی گئی اور تیل کی قیمتوں میں کمی سے مہنگائی میں کمی آنا شروع ہو جائے گی اور پاکستان کی معیشت میں بہتری نظر آئے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ تیل کی عالمی قیمتوں میں کمی کا اثر ملک میں دو ماہ میں محسوس کیا جا رہا ہے۔