64

اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیراعظم عمران خان کو نااہلی کیس کی سماعت کیلئے کل طلب کرلیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے وزیراعظم عمران خان کی نااہلی سے متعلق کیس کی سماعت کل (21 دسمبر) کو طلب کر لی ہے۔

سیتا وائٹ کے حوالے سے دائر کیس کی سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس ارباب محمد طاہر پر مشتمل دو رکنی بینچ کرے گا۔

خیال رہے کہ 2018 میں وزیراعظم عمران خان کے خلاف کاغذات نامزدگی میں ٹائرین وائٹ کو بیٹی قرار نہ دینے پر مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ وزیراعظم کو کاغذات نامزدگی میں غلط معلومات فراہم کرنے پر آئین کے آرٹیکل 62 (i) (f) کے تحت نااہل قرار دیا جائے، انہوں نے مزید کہا کہ اب وہ صادق اور امین نہیں رہے۔

درخواست گزار عبدالوہاب بلوچ گزشتہ عام انتخابات میں پاکستان جسٹس اینڈ ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار تھے۔

درخواست گزار نے بعد ازاں پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی تھی اور فروری 2019 میں مقدمہ واپس لینے کے لیے متفرق درخواست دائر کی تھی، متفرق درخواست سے متعلق سماعت بھی کل ہوگی۔

2018 میں، آئی ایچ سی نے عمران خان کی نااہلی سے متعلق کیس کی سماعت کے لیے ایک ڈویژنل بنچ تشکیل دیا تھا۔ ڈویژنل بنچ دو ارکان پر مشتمل تھا اور اس کی سربراہی اسلام آباد ہائی کورٹ کے سابق جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی کر رہے تھے۔ بینچ کے دوسرے رکن جسٹس اطہر من اللہ تھے۔

سابق جج جسٹس عزیز شوکت صدیقی نے کیس کی سماعت کی اور عمران خان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے یکم اگست کو طلب کرلیا۔

بعد ازاں بنچ تبدیل کر کے جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب کو اس بنچ کا حصہ بنا دیا گیا۔

2 اگست 2018 کو جسٹس عامر فاروق اور جسٹس اورنگزیب نے کیس کی سماعت کرنی تھی لیکن بینچ نے سماعت سے معذرت کر لی جس پر بالآخر بنچ تحلیل ہو گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں