214

خدیجہ شاہ کو کوئٹہ پولیس نے قتل اور اقدام قتل کے الزام میں گرفتار کرلیا

فیشن ڈیزائنر اور سوشل میڈیا ایکٹوسٹ خدیجہ شاہ کو کوئٹہ پولیس نے قتل اور اقدام قتل کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ دوسری جانب پنجاب حکومت نے پیر کو ان کی نظر بندی کا حکم واپس لے لیا جس سے کیس میں نیا موڑ آگیا۔

کوئٹہ پولیس نے پیر کی سہ پہر خدیجہ کو گرفتار کیا، اور انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ان کا دو روزہ راہداری ریمانڈ پولیس کے حوالے کیا۔

پولیس نے شاہ کے خلاف کوئٹہ کے بجلی روڈ تھانے میں درج قتل اور اقدام قتل کا مقدمہ درج کرتے ہوئے ٹرانزٹ ریمانڈ کے لیے اے ٹی سی میں درخواست دائر کی تھی۔ پولیس نے درخواست میں کہا کہ ملزم کے وارنٹ کوئٹہ کی اے ٹی سی سے حاصل کر لیے ہیں۔

اے ٹی سی نے پولیس کو ہدایت کی کہ اسے دو دن میں متعلقہ عدالت میں پیش کیا جائے۔

اس سے قبل پیر کو پنجاب حکومت نے اس سے قبل جاری کیا گیا نظر بندی کا حکم واپس لے لیا تھا۔ یہ کارروائی شاہ کے شوہر جہانزیب امین کی جانب سے نظر بندی کو چیلنج کرنے والی درخواست کے جواب میں سامنے آئی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ نے اس سے قبل خدیجہ شاہ کو پیر کی سہ پہر ان کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا تھا۔ اس نے پولیس کو شاہ کو 2:30 بجے پیش کرنے کا بھی حکم دیا۔

جسٹس علی باقر نجفی نے خدیجہ شاہ کی نظر بندی کے خلاف دائر درخواست پر سماعت کی۔

قانونی جنگ جاری رہنے کا امکان:
نظر بندی کے حکم نامے کی واپسی نے کیس کو مزید غیر یقینی صورتحال میں ڈال دیا ہے۔ امکان ہے کہ شاہ کی قانونی ٹیم کوئٹہ کی گرفتاری اور ان کے خلاف الزامات کو چیلنج کرے گی۔ دریں اثنا، کوئٹہ میں حکام اپنی تحقیقات جاری رکھیں گے اور شاہ کو عدالت میں پیش کرنے کی کوشش کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں