13

سکھ برادری نے مذہبی جذبات مجروح کرنے پر کنگنا رناوت کے خلاف ایف آئی آر درج کرادی

کنگنا رناوت منگل کو اس وقت گرم پانیوں میں اتر گئیں جب سکھ برادری کے افراد نے ان کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے پر اسٹار کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی۔

بالی ووڈ اداکار نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر ایک پوسٹ شیئر کی جس میں انہوں نے کسانوں کو ‘خالستانی’ کہتے ہوئے ان کے لیے مبینہ طور پر توہین آمیز ریمارکس لکھے۔

خالصتانی دہشت گرد آج حکومت کو بازو مروڑ رہے ہیں لیکن ہمیں یہ نہیں بھولنا چاہیے کہ خاتون وزیر اعظم نے انہیں اپنے جوتے تلے کچل دیا تھا… خواہ اس نے اس قوم کو کتنی ہی تکلیفیں پہنچائیں… اس نے اپنی جان کی قیمت پر انہیں مچھروں کی طرح کچل دیا۔ …لیکن ملک کو ٹکڑے ٹکڑے نہیں ہونے دیا…اس کی موت کے کئی دہائیوں بعد بھی…وہ آج بھی اس کا نام سن کر کانپ جاتے ہیں…انہیں اس جیسے گرو کی ضرورت ہے۔‘‘ (انڈین ایکسپریس کا انگریزی میں ترجمہ)

ایف آئی آر جو دہلی سکھ گوردوارہ مینجمنٹ کمیٹی (ڈی ایس جی ایم سی) کے رہنماؤں نے درج کی ہے، اس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ رناوت کے مذکورہ بیان نے سکھوں کے عقائد کی توہین کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں